45

بینظیر قتل کیس: بری کیے گئے ملزمان مزید 30 دن زیرحراست رہیں گے

راولپنڈی: سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کے قتل کیس کے فیصلے میں انسداد دہشت گردی عدالت (اے ٹی سی) کی جانب سے بری کیے جانے والے 5 ملزمان کو پنجاب پولیس کے محکمہ انسداد دہشت گردی کی درخواست پر مزید 1 ماہ کے لیے حراست میں رکھا جائے گا۔واضح رہے کہ بری کیے جانے والے ان پانچوں ملزمان کا تعلق مبینہ طور پر تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) سے ہے۔راولپنڈی کے ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن آفیسر (ڈی سی او) نے گذشتہ شب (31 اگست کو) ان ملزمان کو حراست میں رکھنے کے احکامات جاری کیے۔

31 اگست کو رفاقت حسین، حسنین گل، شیر زمان، اعتزاز شاہ اور عبد الرشید نامی افراد کو انسداد دہشت گردی کییاد رہے کہ سابق وزیراعظم اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کی چیئرپرسن بینظیر بھٹو کو 27 دسمبر 2007 کے روز راولپنڈی کے لیاقت باغ کے باہر فائرنگ اور بم حملے میں قتل کردیا گیا تھا۔اُس وقت جنرل (ر) پرویز مشرف کی حکومت نے بینظیر بھٹو کے قتل کا ذمہ دار ٹی ٹی پی کے سربراہ بیت اللہ محسود کو ٹھہرایا تھا۔تاہم 2009 میں امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والے بیت اللہ محسود نے اس قتل میں اپنے ملوث ہونے کی تردید کی تھیعدالت نے ناکافی شواہد کی بناء پر بری کرنے کا فیصلہ سنایا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں